پولیس افسروں کی غیر قانونی ترقیاں ختم، دوبارہ جونئیر ہوگئے

0
317

سندھ پولیس کے انسپکٹرز کی سینیارٹی لسٹ میں پولیس رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے من پسند افراد کو سینیارٹی دیدی گئی تھی اور درجنوں ایسے افسران فہرست میں شامل تھے جنہیں ترقی پہلے مل گئی اور ترقی کے لیے ضروری کورس بعد میں کیا۔

انسپکٹر جنرل (آئی جی) پولیس سندھ نےتمام پولیس رینج میں تحقیقاتی کمیٹیاں قائم کی تھیں تاہم ڈی آئی جی امین یوسفزئی کی سربراہی میں کراچی رینج کی کمیٹی نے رپورٹ تیار کرلی ہے۔

رپورٹ کے مطابق کمیٹی نے غیرقانونی ترقی پانے والے 97 افسران سے متعلق تحقیقات کیں اورتحقیقات کے دوران تمام افسران کی ترقیاں غیرقانونی پائی گئیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غیرقانونی ترقی پانے والے سینیارٹی لسٹ میں اپنے سینیئرز سے آگے نکل گئے تھے جس پر کمیٹی نے تمام 97 افسران کی ترقیاں غلط قرار دے کر اصل سینیارٹی پر بھیج دیا جب کہ 97 افسران کی غیرقانونی ترقیاں کالعدم ہونے سے 1800 انسپکٹرز کو فائدہ ہوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق 7 افسران نے اپنی ترقی سے متعلق دستاویزات کمیٹی کو پیش نہیں کیں جس پر ان افسران کی سینیارٹی بھی روک دی گئی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here