الیکشن کمیشن کے سامنے 19جنوری کواحتجاج کیا جائے گا۔اپوزیشن اتحاد

0
30

حزب اختلاف میں شامل مختلف سیاسی جماعتوں پر مشتمل اتحاد پی ڈی ایم نے 19 جنوری کو اسلام آباد میں چیف الیکشن کمشنر کے دفتر کے سامنے احتجاجی دھرنا دینے کا اعلان کر دیا ہے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان 19 جنوری کو ملک کی حکمران جماعت پاکستان تحریک کے خلاف بیرونی فنڈز کے سلسلے میں دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والا ہے۔

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ اور جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ملاکنڈ کے مرکزی قصبے بٹ خیلہ میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سیلیکٹڈ وزیر اعظم عمران خان کا نہ صرف الیکشن کمیشن آف پاکستان تک پیچھا کیا جائے گا بلکہ 21 جنوری کو کراچی میں اسرائیل نامنظور ریلی کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔

مولانا فضل الرحمان نے موجودہ حکومت پر اسرائیل کو تسلیم کرنے کی منصوبہ بندی کرنے کا الزام بھی لگایا۔

مولانا فضل الرحمان اور پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری زرداری سمیت اتحاد میں شامل دیگر جماعتوں کے رہنماؤں نے وزیراعظم عمران خان اور ان کی جماعت پر نااہلی کا الزام لگاتے ہوئے ان کے مستعفی ہونے کے اپنے مطالبات دوہرائے۔

ملاکنڈ بٹ خیلہ میں ہونے والے اس ریلی میں مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ اس ریلی سے پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی نائب صدر مریم نواز شریف نے خطاب نہیں کیا، تاہم شرکا میں پاکستان مسلم لیگ ن کے کارکن نمایاں طور پر دکھائی دیے۔

دوسری جانب حکمران جماعت کا الزام ہے کہ اپوزیشن کا اتحاد اس لیے مظاہرے جاری رکھے ہوئے ہے تاکہ ان کے خلاف کرپشن کے مقدمات ختم کر دیے جائیں۔ عمران خان متعدد موقعوں پر کہہ چکے ہیں کہ وہ کسی بھی کرپٹ شخص کو معاف نہیں کریں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here