اسٹیل ملز: وفاق کی سندھ کوبولی میں شرکت کی دعوت(سعد احمد)

0
310

وفاقی وزیر حماد اظہر کا کہنا تھا کہ اسٹیل ملز کے 95 فیصد ملازمین کو فارغ کریں گے، جبکہ پہلے فیز میں 4500 ملازمین کو فارغ کردیا جائے گا۔ وفاقی وزیر صنعت و پیداوار حماداظہر نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سندھ حکومت کو اسٹیل مل کی نجکاری میں حصہ لینے کی دعوت دے دی، حماد اظہر کا کہنا تھا کہ اسٹیل مل میں 9500 ہزار ملازمین ہے جن میں پہلے فیز میں 4500 ملازمین کو نکالا جائے گا،اسٹیل ملز کے 95 فیصد ملازمین کو فارغ کردیا جائے گا۔ وفاقی وزیر حماد اظہر کا کہنا تھا کہ پاکستان اسٹیل مل پر 200 ارب روپے کی مالی بقایاجات ہیں پیپلز پارٹی کی حکومت میں اسٹیل ملز کے 100 ارب کے نقصانات ہوئے،35 کروڑ روپے تنخواہیں اور 20 ارب سالانہ پنشن کی ادائیگی پر خرچ ہوتے ہیں، 230 ارب کا قرضہ اور 15 سے 20 ارب سالانہ نقصانات ہیں ۔حماد اظہر کا مزید کہنا تھا کہ حکومت یہ چاہتی ہے کہ نجی شراکت دار کے ذریعے اس مل کو چلایا جائے،اس پر سیاست وہ لوگ کریں گے جن کی وجہ سے اسٹیل ملز بند ہوئی، وہ بھی سیاست کریں گے جنہوں نے کہا تھا کہ پی آئی اے کے ساتھ اسٹیل ملز مفت لیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here